جماعت اسلامی ظلم پر مبنی استحصالی نظام کے خلاف برسرپیکار ہے،خالد محمود

جماعت اسلامی ظلم پر مبنی استحصالی نظام کے خلاف برسرپیکار ہے،خالد محمود مظفرآباد( پرل نیوز) جماعت اسلامی آزادجموں وکشمیر کے امیر ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی ظلم پر مبنی استحصالی نظام کے خلاف برسرپیکار ہے ،فرسودہ نظام اور کرپٹ قیادت کے ہوتے ہوئے ہمارے مسائل حل نہیں ہوسکتے ،کشمیرکی آزادی اور ریاست کی خوشحالی ہمارا ایجنڈا اور مشن ہے جماعت اسلامی نے امانتدار ،دیانتدار ،باصلاحیت اور صاحب کردار امیدواران میدان میں اتار دئیے ہیں عوام جماعت اسلامی کے امیدواروں کو کامیاب کرکے اسمبلی میں پہنچائیں ،73سالوں سے ریاستی وسائل درست انداز سے استعمال نہیں ہوئے جس کی وجہ سے ریاست کا یہ چھوٹا سا آزاد خطہ مسائلستان بنا ہوا ہے ،سڑکیں کھنڈرات کا منظر پیش کررہی ہیں صحت اور تعلیم کا نظام خستہ خالی کا شکار ہے مقبوضہ کشمیر میں 19ماہ سے سوا کروڑ کشمیری بدترین لاک ڈائون کا شکار ہیں تقسیم کشمیر کی کسی بھی سازش کوکامیاب نہیں ہونے دیں گے وحدت کشمیر اور حق خودارادیت پر کشمیری کوئی کمپرومائز نہیں کریں گے جس نے بھی کشمیری شہداء کے خون سے بے وفائی کی وہ نشان عبرت بنا ہے ،جماعت اسلامی خدمت کے شاندار ریکارڈ اور تحریک آزادی کشمیر میں بے مثال کردار کے ساتھ انتخابی معرکے میں اتری ہے ان خیالات کااظہار انہوں نے ورکر کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،اس موقع پر مرکز ی نائب امیر شیخ عقیل الرحمان،سیکرٹری جنرل تنویر انور خان،ڈپٹی سیکرٹری قاضی شاہد حمید،امیر ضلع ارشد بخاری ایڈووکیٹ،سید نذیر حسین شاہ،پروفیسر مصطفی ،راجہ آفتاب،لطیف عباسی،راجہ نذیر،اسد اسلم راجہ ،خالد زیدی سمیت دیگر قائدین نے خطاب کیا ،اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہاکہ قیادت کی نا اہلی کی وجہ سے آزادکشمیر ترقی کی راہ پر گامزن نہ ہوسکا قدرتی وسائل کی فراوانی کے باوجود یہاں کے نوجوان بیرون ممالک میں دربانی پر مجبور ہیں تھانے اور کچہریاں امن کا گہوارہ ہونے کی بجائے خوف کے نشان ہیں پڑھے لکھے نوجوان ڈگریاں ہاتھوں میں تھامے دربدر ہیں بیس کیمپ کی قیادت نے نہ تو یہاں کے مسائل حل کیے اور نہ ہی وہ کردار ادا کیا جس کے مقبوضہ کشمیرکی آزادی ممکن ہوتی جماعت اسلامی بیس کیمپ کے حقیقی کردار کی بحالی اور یہاں کے عوام کے مسائل کے حل کے ایجنڈے کے ساتھ عوام کے پاس جارہی ہے جماعت اسلامی کے کارکن ایک ایک گھر اور ایک ایک فرد تک پہنچیں موثر لوگوں کو جماعت میں شامل کریں ۔

متعلقہ خبریں

13-03-2018

13-03-2018