اسلام آباد ہائی کورٹ کا سوشل میڈیا سے گستاخانہ موادہرصورت میں ختم کرنے کا حکم

اسلام آباد،راوالاکوٹ(پرل نیوز )تحریک تحفظ ناموس رسالت کے رہنماؤں نے کہاہے کہ حکومت فوری طورپرسوشل میڈیاپرگستاخانہ پیجزبندکرے گستاخی رسول ؐ کے مرتکب افرادکوگرفتارکرکے ان کے خلاف 295/Cکے تحت کاروائی عمل میں لائی جائے ، سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد پھیلانے والے اسلام دشمن قوتوں کے ہاتھوں میں کھیل رہے ہیں۔ حکومت قانون ناموس رسالت پر عمل در آمد کے سلسلہ میں اپنی ذمہ داریاں پوری کرے۔ گستاخ بلاگرز کو بھی آپریشن ردّالفساد کی زد میں لایا جائے اور سزا یافتہ گستاخان رسول کو پھانسیاں دی جائیں،اسلام آباد ہائی کورٹ کا سوشل میڈیاپرگستاخانہ مواد کے خلاف مشترکہ کمیٹی بنانے کا اعلان خوش آئند ہے عدالت نے ذمہ داروں کا نام ای سی ایل میں ڈال کر امت مسلمہ کی ترجمانی کا حق ادا کردیا ہے حکومت نے اگرہمارے مطالبات پرعمل درآمدنہ کیاتواحتجاج کادائرہ کارپورے ملک تک پھیلائیں گے اورڈی چوک میں جلدبڑامظاہرہ کریں گے ان خیالات کااظہاررہنماؤں نے نیشنل پریس کلب کے سامنے بہت بڑے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا احتجاجی مظاہرے سے تحریک تحفظ ناموس رسالت کے سربراہ مولاناقاضی عبدالرشید،جمعیت علماء اسلام ف کے رہنماء مولانانذیرفاروقی ،وفاق المدارس العربیہ اسلام آبادکے ناظم اعلی مولاناظہوراحمدعلوی ،مولانا عبدالقدوس محمدی ،انصارالامہ پاکستان کے سربراہ مولانافضل الرحمن خلیل ،مفتی مجیب الرحمن ، شیخ الحدیث مولاناعبدالرؤف ،مولانا قاضی شبیر احمد عثمانی ،اہل سنت والجماعت اسلام آبادکے سربراہ مولاناعبدالرزاق حیدری ،مولاناعطاء محمددیشانی ،قاری خالقدادعثمان ،مولاناعبدالمجیدہزاروی ،قاری عبدالکریم ،مفتی محمدعبداللہ ،مولانافیض الرحمن عثمانی ،تاجر رہنما شرجیل میر ،مولانامحمدادریس حقانی ،مفتی اویس عزیز،مفتی عبدالسلام ،مولانامحمدشریف ہزاروی ، مولانامحمدطیب ،مولاناعبدالغفارتوحیدی ،ڈاکٹرعبدالشکورحمادی ،صحافی شرجیل امجد راؤ ،مولاناسعیدالرحمن سرورصاحبزادہ سعید الرشید عباسی ودیگرنے خطاب کیا اس موقع پرمظاہرے میں عوام کی بہت بڑی تعدادمیں شرکت کی اورسوشل میڈیاپرگستاخانہ موادکے خلاف سخت نعرے بازی کی رہنماؤں نے اس موقع پرخطاب کرتے ہوئے کہاکہ ناموس رسالت اور عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کے لیے امت کے تمام طبقات متفق ہیں آزادی اظہار کی آڑ میں شعائر اسلام کا مذاق اڑانا سنگین جرم ہے۔ توہین قر آن ، توہین رسالت اور توہین امہات المومنین کا ارتکاب کرنے والے گستاخ بلاگرز کروڑوں مسلمانوں کے مجرم ہیں۔ سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد پھیلانے والے اسلام دشمن قوتوں کے ہاتھوں میں کھیل رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

13-03-2018

13-03-2018