یاسر نامی طالب علم کی ہوسٹل سے نعش برآمد

راولاکوٹ(کرائم رپورٹر)نجی ہاسٹل سے جامعہ پونچھ کے طالبعلم یاسر کی پھنکے سے لٹکتی نعش برآمد ،اطلاع پر شہریوں،جامعہ پونچھ کے طلبہ اور اساتذہ جمع ہوگے ،بغیر پوسٹ مارٹم نعش بھمبر روانہ ،خود کشی کی وجوہات سامنے نہ آسکیں تفصیلات کے مطابق راولاکوٹ کے ایک نجی ہاسٹل سے جامعہ پونچھ کے طالبعلم یاسر کی نعش لٹکتی ہوئی ملی جس پر پولیس نے نعش کو اپنی تحویل میں لے لیا بعدازاں نماز جنازہ ساڑھے چھ بجے کالج گراونڈ میں اداکی گئی جس کے بعد ورثاء کی رضامندی سے نعش بھمبر بھیج دی گئی یہاں پر�آج ان کی نماز جنازہ کے بعد سپرد لحد کیا جائے گا خود کشی کی وجوہات سامنے نہ آسکیں تاہم پولیس مصروف تفتیش ہے طالبعلم کے بارہ میں بتایا جاتا ہے کہ وہ جامعہ پونچھ میں ڈی وی ایم کا طالبعلم تھا ،یاد رہے اس سے قبل بھی نجی ہاسٹل میں رہاڑہ سے تعلق رکھنے والی طالبہ بھی دم گھٹنے سے جاں بحق ہوگئی تھی ،ادھر عوامی حلقوں نے ہاسٹل لائف پر سوالات اٹھاتے ہوئے کہا کہ ہاسٹل میں طلبہ کی خودکشی یا اموات سوالیہ نشان ہے عوامی حلقوں نے کہا کہ نجی ہاسٹلز کے لے ماہرین کی نگرانی میں قواعد وضوابط آشکارا کیے جائیں تاکہ ہاسٹل لائف میں حادثات سے بچنے کے لیے اقدامات اٹھائے جاسکیں

متعلقہ خبریں

13-03-2018

13-03-2018