خواتین کا محلے اور گھروں میں چکر لگانا معمول بن گیا،

راولاکوٹ(سپیشل رپورٹر) راولاکوٹ غیر ریاستی بھکاریوں کی بھر مار ضلعی انتظامیہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ۔خواتین کا محلے اور گھروں میں چکر لگانا بھی معمول بن گیا ، نیشنل ایکشن پلان کی سر عام دھجیاں ۔شہر اور گردونواح میں بھکاریوں کی تعداد معمول سے کہیں زیادہ ہوگئی ،دکان دار ہوٹل مالکان اور سیاح بھی اکتا گئے۔ تفصیلات کے مطابق راولاکوٹ شہر میں غیر ریاستی بھکاریوں نے ڈیرے جما لیئے ، جن میں خواتین اور بچوں کی تعداد مردوں کی نسبت زیادہ ہے ، پاکستان میں موسمی صورتحال تبدیل ہونے کے بعدان لوگوں نے آزاد کشمیر کا رخ کر لیا ، موسم کے مزے لوٹنے کیساتھ ساتھ ان لوگوں نے بھیک مانگنا پیشہ بنا لیا ہے ، یہ خواتین گھروں اور محلوں میں چکر لگاتی ہیں اور سادہ لو ح خواتین کو بہلا پھسلاکر بھاری رقم بٹورنا ان کا وتیر ا بن گیا ہے ، اس کے علاوہ یہ خواتین مبینہ طور پر مختلف جرائم میں بھی ملوث پائی جاتی ہیں ۔ ضلعی انتظامیہ راولاکوٹ کا سر عام نیشنل ایکشن پلان کے دھجیاں اڑتے دیکھنا اور ایسے عناصر کو کھلی چھوٹ دے رکھنا ان کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ۔عوامی حلقوں نے مطالبہ کیا ہے ایسے عناصرنے گھر محلے اور شہر میں جینا دوبھر کر رکھا ہے ، انتظامیہ کسی بڑے حادثے سے قبل ان کے خلاف تحت ضابطہ کاروائی عمل میں لائے ۔راولاکوٹ(سپیشل رپورٹر) راولاکوٹ غیر ریاستی بھکاریوں کی بھر مار ضلعی انتظامیہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ۔خواتین کا محلے اور گھروں میں چکر لگانا بھی معمول بن گیا ، نیشنل ایکشن پلان کی سر عام دھجیاں ۔شہر اور گردونواح میں بھکاریوں کی تعداد معمول سے کہیں زیادہ ہوگئی ،دکان دار ہوٹل مالکان اور سیاح بھی اکتا گئے۔ تفصیلات کے مطابق راولاکوٹ شہر میں غیر ریاستی بھکاریوں نے ڈیرے جما لیئے ، جن میں خواتین اور بچوں کی تعداد مردوں کی نسبت زیادہ ہے ، پاکستان میں موسمی صورتحال تبدیل ہونے کے بعدان لوگوں نے آزاد کشمیر کا رخ کر لیا ، موسم کے مزے لوٹنے کیساتھ ساتھ ان لوگوں نے بھیک مانگنا پیشہ بنا لیا ہے ، یہ خواتین گھروں اور محلوں میں چکر لگاتی ہیں اور سادہ لو ح خواتین کو بہلا پھسلاکر بھاری رقم بٹورنا ان کا وتیر ا بن گیا ہے ، اس کے علاوہ یہ خواتین مبینہ طور پر مختلف جرائم میں بھی ملوث پائی جاتی ہیں ۔ ضلعی انتظامیہ راولاکوٹ کا سر عام نیشنل ایکشن پلان کے دھجیاں اڑتے دیکھنا اور ایسے عناصر کو کھلی چھوٹ دے رکھنا ان کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے ۔عوامی حلقوں نے مطالبہ کیا ہے ایسے عناصرنے گھر محلے اور شہر میں جینا دوبھر کر رکھا ہے ، انتظامیہ کسی بڑے حادثے سے قبل ان کے خلاف تحت ضابطہ کاروائی عمل میں لائے ۔

متعلقہ خبریں

13-03-2018

13-03-2018