پانی میں ڈوب کر جان بحق

راولاکوٹ(جنرل رپورٹر)راولاکوٹ کے قریبی نالہ متیالمیرہ میں اقراء یونیورسٹی سے آئے ہوئے ٹور میں سے ایک نوجوان شمس الوہاب نالہ میں ڈوب گیا نوجوان کے ڈوبنے کی خبر سن کر سینکڑوں مقامی لوگ نالہ کے قریب پہنچ گے نالہ سے نعش نکالنے کی کوشش کی لیکن کامیاب نہ ہوسکے تاہم مقامی انتظامیہ نے مظفرآباد سے جماعۃُ الدعوۃ کی ریسکیو ٹیم کو طلب کیا جو دوگھنٖٹے کی مسافت کے بعد راولاکوٹ پہنچی یہاں پر مقامی فف کے نوجوانوں عامر ضیاء کی قیادت میں ا نھیں نالہ میں لے جایا گیا وہاں پر جماعۃ الدعوہ کے غوطہ خوروں نے سو اچھے بجے کے قریب نکال لیا اس موقع پر مقامی لوگوں کی کثیر تعداد نے نعش کے براْمد ہونے کے بعد نعرہ تکبیر کے فلک شگاف نعرے لگائے نعش کو ایمبولینس کے ذریعے ون فائیو کے دفتر میں لایا گیا وہاں پر پولیس آفیسران محمد شوکت ،محمد ارسلان ،ڈی ایس پی عمران اور دیگر کی قیادت میں شمس الوہاب مرحوم کی بھائی کی تحریری اجازت کے بعد نعش کرک کوہاٹ پشاور روانہ کردی گئی درایں اثناء ون فائیو چوکی پر میت کو غسل دیا گیا اور فف کی جانب سے کفن پوشی کی گئی اور نماز جنازہ بھی ادا کی گئی پولیس چوکی بلدیہ کے آفیسران کے مطابق نوجوان اقراء یونیورسٹی ایم بی اے فرسٹ ائیر کا طالبعلم تھا اور سیر کی غرض سے اپنے چالیس دوستوں کے ہمراہ راولاکوٹ میں سیاحت کی غرض سے آیاتھا اور پانی کے قریب غسل کرنے گیا کہ پاؤں پھسلا اور پانی میں گر پڑا تاہم ڈی ایس پی نے مرحوم کے بھائی سے کہا کہ اگر آپ کو کوئی شک ہے تو بتائیں ہم قانونی کاروائی کے لیے تیار ہیں تاہم بھائی نے پوسٹ مارٹم کروانے سے انکار کردیا اور باہمی رضا مندی سے نعش ورثاء پشاور کوہاٹ کرک روانہ کردی گئی ۔

متعلقہ خبریں

13-03-2018

13-03-2018