35

ایل اےسی پرفوجیوں کی تیزی سےنقل وحرکت، ہندوستان کی جانب سےسرحدی رابطوں میں اضافہ

اعلی دفاعی ذرائع کے مطابق زیادہ تر تعمیراتی کام فوج کے لڑاکا انجینئرز اور بارڈر روڈز آرگنائزیشن کر رہے ہیں جو وزارت دفاع کے تحت کام کرتی ہے۔ ایل اے سی کے لیے متبادل سڑکوں کی تعمیر اور ان کو جوڑنے والی دیگر فیڈر سڑکیں حکومت کی جانب سے شروع کیے گئے اسٹریٹجک سرحدی بنیادی ڈھانچے کے منصوبوں میں شامل ہیں۔

اعلی دفاعی ذرائع نے کہا کہ چین کے ساتھ مسلسل تعطل کے درمیان ہندوستان نے گزشتہ دو سال میں لائن آف ایکچوئل کنٹرول (LAC) کے ساتھ سرحدی رابطے کو نمایاں طور پر بڑھایا ہے۔ جس میں متعدد سڑکوں، پلوں، پٹریوں اور سرنگوں کی تعمیر شامل ہیں۔ کئی دیگر اہم بنیادی ڈھانچے کے منصوبے اس وقت جاری ہے۔ جن کا مقصد شہریوں کی رسائی کو مزید بہتر بنانا اور سرحدی علاقوں میں فوجیوں کی تیزی سے نقل و حرکت ہے۔

اعلی دفاعی ذرائع کے مطابق زیادہ تر تعمیراتی کام فوج کے لڑاکا انجینئرز اور بارڈر روڈز آرگنائزیشن کر رہے ہیں جو وزارت دفاع کے تحت کام کرتی ہے۔ ایل اے سی کے لیے متبادل سڑکوں کی تعمیر اور ان کو جوڑنے والی دیگر فیڈر سڑکیں حکومت کی جانب سے شروع کیے گئے اسٹریٹجک سرحدی بنیادی ڈھانچے کے منصوبوں میں شامل ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں