2

بھارتی یوم جمہوریہ کے موقع پر آزادکشمیر سمیت ملک بھر میں مقیم کشمیری عوام آج یو م سیاہ منائیں گے

سری نگر(کے پی آئی)کنٹرول لائن کے دونوں اطراف اور دنیا بھر میں بسنے والے کشمیری جمعرات کے روز بھارت کے یوم جمہوریہ کو یوم سیاہ کے طور پر منائیں گے تاکہ عالمی برادری پر زور دیا جاسکے کہ وہ بھارت کی طرف سے کشمیری عوام کو ان کا حق خودارادیت دینے سے مسلسل انکار کا نوٹس لے۔ یوم سیاہ منانے کی اپیل کل جماعتی حریت کانفرنس نے کی ہے۔ یو م سیاہ کے موقع پر مقبوضہ کشمیر، آزادکشمیر، پاکستان اور دیگر ممالک کے دارالحکومتوں میں بھارت کیخلاف احتجاجی ریلیاں اور مظاہرے کئے جائیں گے جن میں عالمی برادری کو یہ پیغام دیا جائے گا کہ بھارت کشمیرپر غیر قانونی طورپر قابض ہے۔ بھارتی فوج اور پولیس کے اعلی افسروں نے راجوری میں نام نہاد سکیورٹی کی صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا اورضلع کے آزادی پسند عوام خصوصا مسلمانوں کو نشانہ بنانے کیلئے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا۔دریں اثنا بھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروں نے کل منائے جانیوالے بھارتی یوم جمہوریہ کی سرکاری تقریبات سے قبل سیکورٹی کے نام نہاداقدامات کے نام پر لوگوں کی آزادانہ نقل و حرکت پرپابندی عائد کر دی ہے۔ صدرآزاد جموں وکشمیربیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا ہے کہ ریاست جموں وکشمیر کے دونوں اطراف اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری آج یوم سیاہ اس عزم کے ساتھ منارہے ہیں کہ کشمیری اپنی جدوجہد کو حصول آزادی تک جاری رکھیں گے۔5اگست 2019کے بعد وادی کشمیرمیں مکمل لاک ڈاؤن اور کرفیو ہے۔ بھارتی حکومت نے شہریوں سے جینے کا حق بھی چھین لیا ہے۔ کشمیری نہ پہلے جھکے ہیں اور نہ اب دنیا کی کوئی طاقت ان کے جذبے کو زیر کر سکتی ہے۔ بھارتی فوج کی ظلم وبربریت کشمیریوں کے جذبہ حریت کو کسی صورت کمزور نہیں کر سکتی۔کشمیری قوم حصول آزادی تک اپنی جدوجہد جاری رکھے گی۔نہوں نے کہا کہ بھارتی افواج نے جبروتشدد کا ایسا کوئی ہتھکنڈا نہیں چھوڑا جو مظلوم کشمیری عوام پر نہ آزمایا ہو لیکن کشمیری عوام جرات وپامردگی اور حوصلے کے ساتھ اپنے موقف پرقائم ہیں۔وزیراعظم آزادجموں وکشمیر اور صدر تحریک انصاف سردار تنویر الیاس خان نے کہا ہے کہ ہندوستان انسانیت کا سب سے بڑا قاتل، ہندوستان کی جمہوریت دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کیلئے سب سے بڑا فراڈ ہے۔جمہوریت کا دعویدار ہندوستان دنیا کا سب سے بڑا دہشتگرد ملک ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہندوستان کے یوم جمہوریہ کو کشمیریوں کے یوم سیاہ مناتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کا یوم جمہوریہ ہمارے لیے یوم سیاہ ہے۔بھارت نے کشمیر پر غاصبانہ قبضہ کر رکھا ہے۔گزشتہ سات دھائیوں سے ہندوستان نے مقبوضہ کشمیر میں غیر جمہوری طریقہ کار اپناتے ہوئے ظلم و جبر کا بازار گرم کر رکھا ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں رائج کالے قوانین صریحاً جمہوری اقدار کیخلاف ہیں۔ 5 اگست کو مودی سرکار نے جموں کشمیر کے اندر آرٹیکل 370 اور 35A کا خاتمہ کر کے جموں کشمیر کے مظلوم کشمیریوں پر کرفیو نافذ کر کے ظلم و جبر کے پہاڑ توڑے۔ 05 اگست کے بعد مقبوضہ کشمیر کے اندر انسانی حقوق کی پامالی کی گئی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں