14

راولاکوٹ،بجلی کی بے جا لوڈشیڈنگ،بلات پر ظالمانہ ٹیکسز کے خلاف شہریوں کے مظاہرے،ریلیاں،دھرنا بدستور جاری

راولاکوٹ (سٹی رپورٹر)عوامی حقوق تحریک پر بجلی کی بے جا لوڈشیڈنگ،بجلی کے بلات پر لگائے گئے ظالمانہ ٹیکسز اور بجلی کے بلات احتجاجاََنہ جمع کروانے والے صافین کے کنکشن منقطع کئے جانے کے خلاف راولاکوٹ میں احتجاجی ریلی اور دھرنے دیا گیا۔منیر چوک میں دھرنے کے باعث مین شاہراہ مکمل بند ہے۔ اس سے قبل ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریشن نے عوامی حقوق تحریک کے ذمہ داران کو مذاکرات کیلئے میٹنگ کال کی جس میں ڈپٹی کمشنر بدر منیر،ایس ایس پی وحید گیلانی،ڈی ایس پی سردار اعجاز،محکمہ برقیات کے ذمہ دار ایس ٹی او امتیاز شاہین جبکہ عوامی حقوق تحریک سے مرکزی رہنما جموں کشمیر لبریشن فرنٹ عمر نذیر کشمیری۔مرکزی رہنما جموں کشمیر لبریشن فرنٹ سردار عبد الحمید،آرگنائزر نیشنل یوتھ فیڈریشن توصیف خالق،سنیئر وائس چیئرمین ایس ایل ایف انوش بٹ،ترجمان ایس ایل ایف ذیشان کاشر،نعیم خان اور دیگر نے شرکت کی تھی۔۔مذاکرات کے دوران انتظامیہ کی طرف سے مطالبہ کیا گیا کہ دھرنے کی کال کو موخر کیا جائیاور ہمیں وقت دیا جائے تا کہ آپ کے کنکشن کو بحال کیا جائے جبکہ عوامی حقوق تحریک کے ذمہ داران نے کہا کہ جب تک ہمارے مطالبات کو تسلیم نہیں کیا جاتا تب تک احتجاجی تحریک جاری رہے گیا آج عوامی حقوق تحریک کی احتجاجی ریلی جو منیر چوک پہچ کر جلسے کی صورت اختیار کر گی۔جس سے خطاب کرتے ہوے مقررین نے واضح کیاکہ ابھی تک بجلی کے کنکشن نیں بحال کیے گے ہیں۔اس لیے چوک میں دھرنا دیں گے۔ مطالبات تسلیم ہونا تک ہمارا احتجاج اور دھرنا جاری رہے گا۔ تاہم آخری اطلاع آنے تک منیر چوک میں دھرنا جاری تھا جس کے باعث مین شاہراہ رات گے تک مکمل بند رہی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں