12

ملک میں مہنگائی عروج پر ہے،پاکستان کو پاؤں پر کھڑا کرنے کیلئے خود ہمت کرنا ہوگی، وزیراعظم

صحبت پور(صباح نیوز)وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت نے 100ارب روپے سے زائد خرچ کئے ہیں اور سیلاب متاثرین کی بحالی کیلئے کئی سو ارب مزید درکار ہیں۔صحبت پور میں مقامی عمائدین سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ صحبت پور کا میرا یہ دوسرا دورہ ہے، پہلے میں یہاں آیا تو یہ پورا علاقہ پانی میں ڈوبا ہوا تھا، خوراک اور دیگر اشیاء پہنچانا آسان نہیں تھا،میں نے اس طرح کا سیلاب اپنی زندگی میں نہیں دیکھا تھا۔وزیر اعظم نے کہا کہ سیلاب کی صورت حال دیکھ کر سوچتا تھا کہ کس طرح یہ لوگ اپنے گھروں کو جائیں گے، اس وقت آئی ایم ایف کے ساتھ ہمارا معاہدہ ٹوٹ چکا تھا، انتہائی مخدوش حالات میں ہم نے حکومت سنبھالی تھی۔سندھ، جنوبی پنجاب سمیت گلگت بلتستان میں ہزاروں لو گ اب بھی امداد کے منتظر ہیں، سیلاب سے تقریباً10لاکھ گھر پانی میں ڈوب چکے ہیں، بلوچ، پٹھان،سندھی یا پھر پنجابی یہ سب کا پاکستان ہے، وفاق اگر بلوچستان کو فنڈز دیتا ہے تو یہ عوام کا حق ہے،دو ماہ میں افسران نے سیلاب زدگان کے سلسلے میں جو محنت کی وہ قابل ستائش ہے، تعلیم اور صحت کے شعبے میں مزید اچھے کام کرنے کی ضرورت ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں مہنگائی عروج پر ہے، اربوں ڈالر خرچ کرکے گندم منگوا رہے ہیں، سیلاب نے چیلنج اور بڑھا دیا، پاکستان کو پاؤں پر کھڑا کرنے کیلئے خود ہمت کرنا ہوگی، ایثار اور قربانی کے جذبے سے آگے بڑھنا ہوگا،سیلاب متاثرین کیلئے وفاقی حکومت نے 100ارب روپے سے زائد خرچ کئے ہیں اور کئی سو ارب مزید درکار ہیں۔وزیر اعظم نے کہا کہ 2008 میں پنجاب کے دور دراز علاقوں کو چن کر دانش سکول بنائے، دانش سکول کی یتیم بچے امریکا سمیت دیگر ممالک میں اعلی تعلیم حاصل کررہے ہیں۔ سندھ، خیبرپختونخوا اور بلوچستان میں بچوں کو عام تعلیم دستیاب نہیں، ہمیں ہر بچے کو اعلی تعلیم فراہم کرنا ہوگی۔وزیر اعظم نے کہا کہ دانش سکول کی طرز پر بلوچستان میں 12 سکول قائم کریں گے، 12سکولوں میں روشنی کے لئے شمسی توانائی استعمال کی جائیگی، 23 مارچ کو دانش سکول کا افتتاح کروں گا،چیف سیکرٹری بلوچستان سے درخواست ہے وہ سکولز کے لئے زمین ڈھونڈیں۔ وزیر اعظم شہباز شریف رحیم یار خان کے دانش سکول کا واقعہ سناتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے اور کہا کہ دانش سکولوں میں ای لائبریریز ہیں، ای لائبریری میں مختلف قسم کی اچھی اچھی کتابیں رکھی جائیں۔ وزیراعظم شہباز شریف دورہ بلوچستان کے دوران ضلع صحبت پور بھی گئے، جہاں انہوں نے سیلاب زدگان سے ملاقاتیں کیں، جب کہ اداروں کی جانب سے وزیراعظم کو بحالی کے کاموں پر بریفنگ دی گئی۔این ڈی ایم اے حکام کی جانب سے اب تک کیے گئے اقدامات پر وزیراعظم اور دیگر اراکین کو تفصیلات سے آگاہ کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں