15

ڈاکٹر جائنٹ ایکشن کمیٹی آزادکشمیر کا مطالبات کے حل کیلئے اسمبلی کی جانب احتجاجی مارچ،اوپی ڈیز بند کرنیکا اعلان

مظفرآباد(پرل نیوز)ڈاکٹر جائنٹ ایکشن کمیٹی آزادکشمیر نے مطالبات کے حل کیلئے حکومت کو 3ہفتے کی ڈیڈ لائن دے دی،حکومت ہمارے تسلیم شدہ جائز مطالبات پورے کرئے ورنہ ریاست بھر کے ڈاکٹر اپنے مطالبات کے حق میں دارالحکومت قانون ساز اسمبلی کی جانب احتجاجی مارچ کرینگے اور مطالبات کے حل تک دھرنا دینگے،دوسرے مرحلے میں او پی ڈیز بند کی جائیں گی،صرف ایمرجنسی سروس فراہم کی جائے،وزیراعظم آزادکشمیر اور حکومتی ذمہ داران نوٹس لیں،ڈاکٹرز،سٹاف اور مریضوں کے مسائل حل کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں ہمیں احتجاج پر مجبور نہ کیا جائے۔بدھ کے روز مرکزی ایوان صحافت میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر جائنٹ ایکشن کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر واجد،ڈاکٹر ارشدراجہ،راجہ بشارت حیات،ڈاکٹر وقار بٹ،ڈاکٹر راشد الیاس نے کہا کہ آزادکشمیر کابینہ نے ہمارے مطالبات کو منظور کیا لیکن اس کے باوجود بیوروکریسی رکاوٹ بنی ہوئی ہے،فنانس کا ایک ایڈیشنل سیکرٹری کابینہ کے منظور شدہ مطالبات کو مسترد کررہا ہے،وزیراعظم سے ملاقات کوشش کے باوجود نہیں ہو سکی،بیوروکریسی کے کچھ لوگ وزیراعظم اور ڈاکٹرز کے درمیان فاصلہ پیدا کررہے ہیں ہماری ملاقات ہو تو بہت سے مسائل حل ہو سکتے ہیں۔پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹرز کا کہنا تھا کہ ہم نے اپنے مسائل کے حل کیلئے ایک سال قبل احتجاج کیا جس پر سول سوسائٹی نے ہمارے خلاف عدالت العالیہ میں رٹ دائر کی،عدالتی حکم پر ہم نے احتجاج ختم کیا عدالت نے ہمارے مطالبات کو درست تسلیم کرتے ہوئے حکومت کو ان کے حل کیلئے ہدایات جاری کیں لیکن ایک سال گزرنے کے باوجود ہمارے مطالبات جوں کے توں ہیں حکومت نے ان درست تسلیم کرتے ہوئے کابینہ میں منظور بھی کیا لیکن ان پر عملدرآمد نہ ہو سکا۔ڈاکٹر ز نے کہا کہ ہمارے مطالبات ریاست میں نظام کی بہتر ی کیلئے ہیں،پنجاب کے برابر حقوق دیئے جائیں ہمیں مجبوراً اپنے حق کیلئے احتجاج کرنا پڑرہا ہے،انہوں نے کہا کہ ڈاکٹرز کو بلاوجہ انتقامی کارروائیوں کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔حکومت سن لے کہ مریض اور ڈاکٹر کے حقوق کے ہم لوگ علمبردار ہیں کسی پریشرز سے اپنے جائز مطالبات سے پیچھے نہیں ہٹیں گے،حکومت ایک ایک گاڑی 11کروڑ کی خرید سکتی ہے لیکن ہسپتالوں میں 6کروڑ کی سی ٹی سکن مشین مہیا نہیں کر سکتی اس کیلئے سول سوسائٹی کا بھی تعاون درکار ہے ہر ڈویژن اور ضلع میں بہترین طبی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے ہم اپنے جدوجہد جاری رکھیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں