21

کشمیری حق خود ارادیت اور وحدت کشمیر پر کوئی کمپرومائز نہیں کریں گے، ڈاکٹر خالد

اسلام آباد(صباح نیوز) جماعت اسلامی آزاد جموں وکشمیر کے امیر ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہا ہے کہ کشمیری حق خود ارادیت اور وحدت کشمیر پر کوئی کمپرومائز نہیں کریں گے‘ کشمیریوں نے آزادی کے لیے پانچ لاکھ شہداء پیش کیے ہیں‘ وہ آزادی سے کم کوئی حل قبول نہیں کریں گے‘ جماعت اسلامی آزادخطے کو اسلامی فلاحی ریاست بنانے کی جدوجہد کر رہی ہے‘ کشمیر کی آزادی اور نظام کی تبدیلی ہمارا ہدف ہے‘ جماعت اسلامی کے کارکن قرآن کے ساتھ تعلق کو مضبوط کریں مستقبل جماعت اسلامی کا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی آزاد جموں وکشمیر کے اڑتالیسویں سالانہ جنرل کونسل کے دوروزہ اجلاس کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی تنویر انور خان‘ عثمان آکاش اوردیگر قائدین نے خطاب کیا۔ افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر خالد محمود خان نے کہا کہ پاکستان سے سیاسی مداخلت نہ ہوتی تو آزاد خطے کے عوام درست قیادت کا انتخاب کرتے۔ جماعت اسلامی نے نامساعد حالات میں بھی بلدیاتی انتخابات میں بھرپور انداز سے حصہ لیا اور نمائندگی حاصل کی۔ 31برس بعد بلدیاتی انتخابات کا ہونا خوش آئند ہے اور جمہوری عمل کا یہ تسلسل چلتا رہا تو قوم نا عاقبت اندیش قیادت سے چھٹکارا حاصل کر کے اہل اور دیانت دار قیادت منتخب کرے گی‘ انہوں نے کہا کہ بر صغیر میں جماعت اسلامی عوام کی امید بن چکی ہے کشمیر کی آزادی کے لیے جماعت اسلامی نے شاندار کردار ادا کیا اور کر رہی ہے۔جماعت اسلامی نے خدمت‘ صحت اورتعلیم کے میدانوں میں کارہائے نمایاں سر انجام دئیے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں